گریٹر میکانگ خطے میں غیرمادی ثقافتی ورثہ سے متعلق قانونی نظاموں کا مطالعہ

ایک مضبوط قانونی نظام ICH کے تحفظ میں ایک اہم کردار ادا کرتا ہے۔ ورثے کو محفوظ رکھنے کے لیے ایک کارآمد لائحہ عمل کی تعمیر نمو پذیر ممالک کی حکومتوں کے لیے کلیدی امور میں سے ایک ہے جن کے لیے ICH کے تحفظ کے لیے حسب ضرورت بجٹ اور وسائل انسانی مختص کرنا دشوار ہے۔ ساتھ ہی، ایسے ممالک جنہوں نے 2003 کے کنونشن کی درجہ بندی کی ہے ان سے کنونشن کے اصولوں کے مطابق ایک گھریلو قانونی نظام بنانے کا تقاضہ کیا جاتا ہے۔

ایسے قانونی نظاموں کو تقویت دینے کی کوششوں کی حمایت کے لیے، IRCI نے "گریٹر میکانگ خطے میں غیر مادی ثقافتی ورثہ سے متعلق قانونی نظاموں کا مطالعہ" نامی ایک پروجیکٹ شروع کیا، جو اکتوبر، 2013 میں IRCI کی دوسری بورڈ میٹنگ میں منظور کردہ فیصلے پر مبنی تھا۔ پھر IRCI نے جنوری میں لاؤس کے لیے اور فروری 2014 میں کمبوڈیا کے لیے قانونی ماہرین کی ایک ٹیم بھیجی جنہیں ثقافت سے متعلق سرکاری ایجنیسوں اور تحقیق کنندگان کے ساتھ انٹرویو کرنا تھا۔ IRCI دونوں ممالک کی قومی یونیورسیٹیوں کے تعاون سے مزید تحقیق انجام دینے کی منصوبہ بندی کررہی تھی۔

(یہ پروجیکٹ اکتوبر 2013 میں دوسری گورننگ بورڈ کی میٹنگ کے ذریعہ منظور کردہ منصوبہ عمل کے تحت انجام دیا گیا تھا)